War

حقائق جاننیے کرہ ارض کے سب سے بڑے جنگی ٹینک کے بارے میں۔۔۔۔۔۔۔

دنیا میں ترقی یافتہ ممالک نے ایک دوسرے ملک کو زیر کرنے کے لیے جدید تر جدید جنگی ہتھیاروں کوبنانے کی کوشش میں لگے رہے ہیں۔

میں جو آج آپ

دینا کا سب سے بڑا ٹینک

 

25990کو ایک انتہائی خوفناک جنگی ٹنیک کے بارے میں بتانا چاہتا ہوں۔ اس ٹینک کا نام شچور گستاو ہے۔اس کامطلب ہے بہت بڑی اور مضبوط چیز۔
یہ ٹینک جرمنی کی ایک کمپنی جس کا نام کروب ہے۔ نے بنایاہے۔ اوریہ کمپنی پچھلے 400 سالوں سے جرمنی میں ہھیتارسازی کے کاروبار سے منسلک ہیں۔ اس ٹنیک کو بنانے کا بنیادی مقصد فرانس کی فرنٹ لائن فوج کو تباہ کرناتھا۔ اس ٹینک کا وزن 1،350،000کلو تھا۔ اور اس ٹینک کا گولا 47 کلومیٹر تک دشمن کو نشانہ بنا سکتا تھا۔ اس ٹینک کی لمبائی 155 فٹ تھی۔ اور اس کی گن بیرل کی لمبائی 106 فٹ تھی۔ یہ ٹنیک 38 فٹ اونچا تھا۔ یہ ٹینک پٹری پر چلتا تھا۔ اور 2500 لوگ پٹری کےکام کے لیے منسلک تھے۔ اور 250 افراد اس ٹینک کو چلاتے تھے۔
اس ٹینک کو دوسری عالمی جنگ میں مختلف محا‌ذوں پر استعمال کیا گیا۔ جن میں فرانس ، پولینڈ اور سوویت یونین شامل ہیں۔
اس ٹینک کا خوف اور دہشت اتنی تھی ۔ کہ دشمن کی فوجیں صرف اس ٹینک کو دیکھ کر ہی رستے سے ہٹ جاتی تھیں۔

1 Comment

1 Comment

  1. AhmedYCurley

    March 13, 2016 at 11:16 am

    I am just truly thankful towards the holder of the site that has
    shared this wonderful article at here.

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Most Popular

To Top