Business

ماہانہ 30 ٪ تک بجلی کی بچت۔ پاکستانی ٹائم ضائع نہ کریں۔

پہلی قسط۔۔۔

روز بروز بجلی کی قیمتیں ہر انسان کی پہنچ سے باہر ہوتی جا رہی ہیں۔ وہ کون سے ایسے آسان اقدمات ہیں جن کو ہم استعمال کرتے ہوئے بجلی کی 30٪ فیصد تک بچت حاصل کرسکتے ہیں۔

 

سب سے پہلے آپ کو بجلی کو سمجھنا ہوگا ۔

 

والٹ Xامیپر=واٹ 

 

جب بجلی آتی جاتی رہتی ہے۔ تو اس سے ہمارے گھریلو استعمال کے برقی آلات پر منفی اثرات پڑتے ہیں ۔ اور یہ تو وہ خراب ہوجاتے ہیں یا ان کی زندگی کم پڑ جاتی ہے۔ 

 

مارکیٹ میں مختلف سائز کے کپیسٹر مل جاتے ہیں۔ آپ کے گھر کا جتنا لوڈ ہے۔ آپ اس سے تھوڑی زیادہ کپیسٹی کا کپیسٹر خرید کر اپنے گھر میں مین بورڈ کے قریب والی ساکٹ میں لگا دیں۔ یہ کپیسٹر اپنے اندر بجلی جمع کرلے گا۔ اور جب بجلی آئے گئی تو آپ کے گھر میں برقی آلات شرو‏ع میں جو زیادہ امپیر لیتے ہیں وہ سارا لوڈ اس کپیسٹر پر پڑے گا نہ کہ آپ کے بجلی کے میٹر پر۔ اس سے اگر عام حالات میں آپ کا بجلی کا بل 8000روپے آرہا ہے۔ تو وہ کم ہو کر 7200-7300 تک آجائے گا۔ اس میں صرف ان برقی آلات کو فائدہ ہوگا۔ جن میں مقناطیسی قوت استعمال ہوتی ہے۔ مثال کے طور پر۔ اے سی۔ فریج۔ ڈونکی پمپ ۔ واشین مشین۔ ٹیوب لائٹ۔ وغیرہ وغیرہ۔ 

 

سائنس نے ہمشیہ میرے جیسے غریب آدمی کی مدد کی ہے۔ میں پاس سونی کا 29 انچ کا ٹی وی تھا۔ جو میں نے 2005 میں خریدا تھا۔ اور وہ ٹی وی اپنے دور کا بادشاہ تھا۔ میرا ٹی وی بالکل ٹھیک تھا۔ لیکن  چلتے وقت شروع میں 3500 واٹ بجلی استعمال کرتا تھا۔ اور تھوڑی دیر بعد 400 واٹ بجلی پر آ جاتا تھا۔ میں نے وہ ٹی وی بیچ دیا اور اس کی جگہ سام سنگ کی 32 انچ کی ایل ای ڈی لے آیا ۔ اس کی تصویر اور آواز اس سے بہتر ہے۔ اور یہ چلتے وقت صرف 62 واٹ بجلی استعمال کرتا ہے۔ تو ایل ای ڈی کے پیسے صرف 1 سال میں بجلی کے بل میں بچت سے پورے ہوگئے باقی آنے والے سال بونس۔

 

میرے گھر میں پانی کے جمع کرنے کے لیے موٹر موجود ہے۔ جیسا کے سب گھروں میں موجود ہوتی ہے۔ ایک سال کے بعد اس کے بیرنگ سے آواز آنا شروع ہوگئی اور میں نے موٹر کو ٹھیک کروا لیا۔ 3-4 سالوں کے بعد اس موٹر میں جان ختم ہوگی تو میں نے اس کے امپیر چیک کیے تو وہ تقریبا 465۔1 یونٹ 1 گھنٹے میں استعمال کررہی تھی ۔ پانی کی شدید قلت کی وجہ سے میں نے اس کو بیچ دیا اور اس سے بڑے سائز کی موٹر لے آیا ۔ میٹر لگا کر چیک کیا تو 400۔0 فی گھنٹا استعمال ہورہے تھے۔ تو 5۔3 گنا کم بجلی استمعال ہورہی تھی۔ آپ میری بات سمجھ گئے ہوں گے۔ موٹر کے بیرنگ سے جب بھی آواز آنا شروع ہوجائے ۔ اس کے بیرنگ 300 یا 400 روپے کے نئۓ ڈلتے ہیں۔ اگر آپ یہ کام نہیں کرتے تو وہی پانی والی موٹر آپ کے بل پر ماہانہ 300 -400 روپے جمع کررہی ہوتی ہے۔ اس کے علا وہ موٹر میکنک آپ سے پیسے کاپر وائنڈنگ کے لیتا ہے۔ اور سلور کرکے دیتا ہے۔ آپ اس سے کہیں کے آپ مجھے تار کا نمبر بتا دو۔ میں خود آپ کو لا کر دوں گا۔ اور اپنے سامنے ڈالویں۔ اوراگر آپ یہ سب کچھ نہیں کرسکتے تو موٹر نئی لا کر لگا دیں۔ یہ سب کچھ واشینگ میشن کی موٹر کے ساتھ بھی ہوتا ہے۔ 

 

جاری ہے ۔  کل 5 اقساط

 

Click to comment

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Most Popular

To Top